Monthly Archives: 2014 دسمبر

کس قدر دھوکا دیارنگِ گلستاں نے ہمیں۔۔۔شمس جیلانی

دنیا کا قاعدہ ہے کہ ہمیشہ بہتری کی طرف جاتی ہے۔ لیکن ہم بجائے اس کے ملک حاصل کرنے کے بعد تجربات میں لگ گئے۔ کہ ہمارے لیے کونسا نظام بہتر رہے گا۔ یہ مسئلہ ہم اگر پاکستان بننے سے … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Articles | ٹیگ شدہ ,

۔۔۔ اور کار واں پھرلٹ گیا۔۔۔ از ۔۔۔ شمس جیلانی

ہماری پوری تاریخ کاروانوں کے لٹنے سے عبارت ہے۔ ایک سو پینتیس ما ؤں کی گود اجڑ گئی۔ جانے انہوں نے کن امیدوں کے ساتھ اپنے بچوں کو پڑھنے کے یے بھیجا ہوگا ، ان میں ہر قسم کی مائیں … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Articles | ٹیگ شدہ

ہوئے تم دوست جس کے۔۔۔؟ از۔۔۔ شمس جیلانی

ہوئے تم دوست جس کے۔۔۔؟ از۔۔۔ شمس جیلانی ہوئے تم دوست جس کے اس کا دشمن آسماں کیوں ہو۔ پتہ نہیں شاعر کی اس سے مراد کیا تھی ،اسے دوست نادان ملے تھے؟ یا وہ حضرت خود کسی کی جان … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Articles | ٹیگ شدہ ,

جوگرجتے ہیں وہ برستے نہیں۔۔۔از۔۔۔ شمس جیلانی

یہ محاورہ بڑا قدیم ہے۔ یہ کب اور کس نے کہا تھا اسکا تاریخ ِادب میں کہیں ذکر نہیں ملتا۔ جبکہ اللہ سبحانہ تعالیٰ قادر ہے۔ کبھی بادلوں کے کاندھوں پر رحمت بھیجتا ہے کبھی عذاب، جب کہ لوگ بادلوں … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Articles | ٹیگ شدہ ,