Monthly Archives: 2015 جون

بلّی کے بھاگوں چھینکا ٹوٹا۔۔۔ از۔۔۔ شمس جیلانی

کہتے ہیں کہ بلّی شیر کی خالہ ہے اس نے شیر کو سب کچھ سکھا دیا مگر درخت پر چڑھنا نہیں سکھایا، تاکہ وہ اسکی گرفت سے بچ سکے کیونکہ شیر جنگل کا بادشاہ ہوتا ہے اور تمام بادشاہ بڑے … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Articles | ٹیگ شدہ ,

لو وہ بھی کہہ رہے ہیں۔۔۔ از۔۔۔ شمس جیلانی

آج کل محاوروں کارواج آہستہ ، آہستہ ختم ہوتا جا رہا ہے، یہ بھی  کبھی شعر کی طرح ذریعہ تھا چند لفظوں میں بہت کچھ کہہ دینے کا مثلا ً چھاج بولے تو بولے چھلنی بھی بولی جس میں بہتر … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Articles | ٹیگ شدہ ,

یہ نابیناؤ ں کے مسائل ِقدیمی۔۔۔۔ از۔۔۔ شمس جیلانی

سب سے پہلے یہ ا سلامی تاریخ میں اس وقت نظر آتا ہے۔ جب سورہ عبس کی بارہ آیتیں اللہ سبحانہ تعالیٰ اپنے نبی (ص)کی توجہ بہت ہی محبت بھرے انداز میں نازل فرماتا ہے اور ان کی توجہ ایک … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Articles | ٹیگ شدہ ,

بیٹاتو ہی ہارجا ؟ورنہ یتیم ہوجائے گا؟۔۔۔از۔۔۔ شمس جیلانی

بہت پرانی بات ہے کہ ایک سینما کے مالک کو ہم قرضہ دیکر پھنس گئے! گوکہ ہم نے بچپن سے ہی عہد کرلیا تھا اور اللہ سبحانہ تعالیٰ سے دعامانگی تھی کہ اللہ ہمیں وہ شوق ہی نہ دے جس … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Articles | ٹیگ شدہ ,

شاید بچا ہو وقت ، ابھی مان جائیے۔۔۔ از۔۔۔شمس جیلانی

اچھا برا ہے کیا پہچان جا ئیے۔شاید بچا ہو وقت ابھی مان جائیے۔۔۔ آج میں اپنے ہی اس شعر سے مضمون کی ابتدا کر رہا ہوں؟ جس کی جراءت شاید ہی مجھ سے پہلے کسی مجھ جیسے چھوٹے آدمی نے … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Articles | ٹیگ شدہ ,