Monthly Archives: 2015 دسمبر

یہ مسلماں ہیں جنہیں دیکھ کر شر مائیں۔۔۔ ؟ ز۔۔ شمس جیلانی

ہمیشہ کی طرح حضور (ص) کی پیدائش کا دن گزر گیا مگر کوئی تبدیلی نہیں آئی ہر سابقہ یوم ِ پیدائش کی طرح اس سال بھی ہمارا خیال تھا کہ شاید قوم کو یاد آجائے کہ ہم جن (ص) کے … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Uncategorized

فوج یا الہ دین کا چرا غ۔۔۔ از۔۔۔ شمس جیلانی

ہمارے اور وطن عزیز کے درمیان آجکل تیرہ گھنٹہ کا فرق ہے یعنی ہم تیرہ گھنٹے پیچھے ہیں؟ جب وہاں سورج نکل رہا ہوتا ہے تو ہمارے ہاں غروب ہورہا ہوتا ہے اس لیے جب ہم سوکر اٹھتے ہیں تو … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Uncategorized

دودھ کاجلا چھاچھ پھونک پھونک کر پیتا ہے۔۔۔ از۔۔۔ شمس جیلانی

جس دن قوم ان بچوں کا غم منارہی تھی جو پشاور میں ایک برس پہلے دہشت گردوں نے شہید کر دیے تھے؟ اسی دن شام کی خبر تھی کہ سندھ اسمبلی نے ایک قراداد پاس کر کے رینجرز کے ہاتھ … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Uncategorized

دستورِ دیرینہ ہے کہ ڈاکو ، ڈاکو ؤ ں پر ہاتھ نہیں ڈالتے۔۔۔؟ز ۔۔۔ شمس جیلانی

میں ہمالیہ کی ترائی کا رہنے والاہوں جہاں بڑے ، بڑے جنگلات تھے شہروں میں بر طانیہ کی حکومت تھی لیکن جنگلوں میں ڈاکو عام تھے اور انہیں کا راج تھا۔ اس زمانے میں لکھے ہوئے آئین نہیں ہوتے تھے … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Uncategorized

جانکنی میں کی اس نے جفا سے توبہ!۔۔۔ از۔۔۔ شمس جیلانی

ہمارے شہر رچمنڈ بی ۔ سی میں ایک ہی اہلِ تشیع کی اور ایک ہی سنیوں کی مسجد ہے دونوں دس دس ایکڑ پر ہے، یہ اس شہر کی مونسپلٹی کا اچھوتا منصوبہ ہے جس نے ہر مذہب کی عبادت … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از Articles, Uncategorized