Category Archives: qitaat

(325 – 312) قطعات شمس جیلانی

312 ہر اک کو پتا چلنا ہے؟ شمس جیلانی   کیوں بن جا تے ہو بندے سے درندےرمضان میں ۤآکر کتنی خوشی ہوتی ہے جو دیتا ہےکوئی مال چھپاکر جو کچھ بھی کیا جس نے ہے وہ فرشتوں نے لکھا … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از qitaat | تبصرہ کریں

(251 – 311) قطعات شمس جیلانی

251 وجہ فساد نبی ﷺسے دوری۔۔۔ شمس جیلانی خدا سمجھے انہیں جو ہیں دیں میں ڈالتے رخنہ جدھر بھی دیکھئے ہر جگہ پھیلا ہوا ہےاک فتنہ نبیﷺ نجات کا ذریعہ ہیں جہاں میں مومنو کےلیے جوﷺ نبی سے دور ہے … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از qitaat | تبصرہ کریں

(201 – 250) قطعات شمس جیلانی

201 سپتال سے واپسی پر۔۔۔ شمس جیلانی تجھ کو فقط بقا ہے اور سب من کلِ فان ہے بھیجا عمل کے واسطے تونے ہمیں قر آن ہے کہ جب تک رہیں ہم عامل حفظ وامان ہے ہادی ہواعطا وہ جو … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از qitaat | تبصرہ کریں

(151 – 200) قطعات شمس جیلانی

151 آخری حل۔۔۔۔ شمس جیلانی کرسکتا وہ ہی کچھ ہے ہاتھ میں جس کے ہے ساری کائینات کوئی مفلس کیا کرے گا جو پھر رہا ہے کہیں پر خالی ہاتھ اب جنگ ہو یا امن ہو لگ رہا دنیا کا … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از qitaat | تبصرہ کریں

(101 – 150) قطعات شمس جیلانی

101 دعاعباس رضا زیدی کی نویں سالگرہ پر میری دعا ہےکہ عباس کی عمر خدا دراز کرے سراپا علم کرے اورعالمِ جید وہ کار ساز کرے دے علم وہ ایسا کہ راضی رہے خدا جس سے نانا صفد رو کنبہ … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از qitaat | تبصرہ کریں

(54 – 29) قطعات شمس جیلانی

29 پاکستان کے شب وروز۔۔۔ شمس جیلانی کہتے ہیں کہ چلنا پھرنااب نام تلک ہے پر چلتا وہ صبح سے لیکر شام تلک ہے دن رات کی ہردم تو ، تو میں میں ہے وہ بھی لاٹھی ڈنڈا اور کہرام … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از qitaat | ٹیگ شدہ , | تبصرہ کریں

(28 – 16) قطعات شمس جیلانی

16 خیر میں دیر نہیں۔۔۔۔ شمس جیلانی   ہر خیر میں جلدی کرو رہ جا ئے کہیں کام ادھورا مرضِ ضعیفی کی بلا وہ ہےجو بنا ئےگھاس اور کوڑا شاہین بھی گر جا ئے ہے شمس تھک کر با لآ … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از qitaat | ٹیگ شدہ , | تبصرہ کریں

(1 – 15) قطعات شمس جیلانی

اسپتال سے واپسی پر۔۔۔ شمس جیلانی تجھ کو فقط بقا ہے اور سب من کلِ فان ہے بھیجا عمل کے واسطے تونے ہمیں قر آن ہے کہ جب تک رہیں ہم عامل حفظ وامان ہے ہادی ہواعطا وہ جو صاحبِ … کو پڑھنا جاری رکھیں

شائع کردہ از qitaat | ٹیگ شدہ | تبصرہ کریں